فلسطینیوں کے قتل عام کی وجہ حماس کے حملوں کو قرار دینے پر شیر اسلام ترک صدرطیب اردوان نے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی کلاس لے ڈالی ایسی بات کہہ دی کہ صیہونی ریاست کا سربراہ منہ چھپانے پر مجبور ہو گیا

انقرہ(آئی این پی)ترک صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ حماس دہشت گرد تنظیم نہیں اور نہ ہی فلسطینی دہشت گرد ہیں،حماس فلسطینیوں کی مادرِ وطن کے تحفظ کے لیے قائم کردہ ایک مزاحمتی تنظیم ہے،ترکی فلسطین کے ساتھ کھڑا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق صدر اردگان نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ حماس ایک دہشت گرد تنظیم نہیں ہے اور نہ ہی فلسطینی دہشت گرد ہیں۔ پوری دنیا کی نظروں کے سامنے ظلم و ستم کا نشانہ بنائے جانے والے فلسطینی عوام کے ساتھ ہم اظہار یک جہتی کرتے ہیں ۔صدر نے کہا ہے کہ حماس نہ

تو دہشت گرد تنظیم ہے اور نہ ہی فلسطینی دہشت گرد ہیں۔انہوں نے اسرائیل کے وزیراعظم بنیا مین نتن یا ہو کو دوسری بار ٹوئٹر کے ذریعے پیغام روانہ کیا ہے۔انہوں نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ حماس ایک دہشت گرد تنظیم نہیں ہے اور نہ ہی فلسطینی دہشت گرد ہیں۔ پوری دنیا کی نظروں کے سامنے ظلم و ستم کا نشانہ بنائے جانے والے فلسطینی عوام کے ساتھ ہم اظہار یک جہتی کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ حماس فلسطینیوں کی مادرِ وطن کے تحفظ کے لیے قائم کردہ ایک مزاحمتی تنظیم ہے

یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ