ڈراپ کیچز کے بھوت نے محمد عامر کو جکڑ لیا ، 17 وکٹوں سے محروم رہے

ڈبلن: قومی ٹیم کے کم بیک کے بعد بدقسمتی نے فاسٹ باﺅلر محمد عامر کا دامن تھام لیا،فیلڈرز نے17کیچز ڈراپ کرکے پیسر کو یقینی وکٹوں سے محروم کردیا ۔سپاٹ فکسنگ سکینڈل میں 5سال پابندی کی سزا مکمل ہونے پر محمد عامرنے انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کے بعد اب تک 17 ٹیسٹ کھیلے جس میں16کیچز ڈراپ ہوئے، کم بیک کے بعد لارڈز ٹیسٹ میں 2016ءمیں محمد حفیظ اور سرفراز احمد نے الیسٹر کک کو موقع دیا،اولڈ ٹریفورڈ میں اسد شفیق نے ایلکس ہیلز اور یونس نے جیمز ونس کا کیچ ڈراپ کیا، اوول میں اظہر علی نے معین علی کو اننگز جاری رکھنے کا موقع دیاجب کہ ویسٹ انڈیز کیخلاف شارجہ ٹیسٹ میں لیون جو نسن کو مصباح الحق اور سمیع اسلم نے مواقع فراہم کرتے ہوئے محمد عامر کو وکٹ سے محروم رکھا۔

نیوزی لینڈ کیخلاف ہیملٹن ٹیسٹ میں سمیع اسلم نے2مرتبہ جیت راول کو اننگ جاری رکھنے کا موقع دیا جبکہ محمد عامر اپنی ہی گیند پر ولیمسن کا ریٹرن کیچ نہ تھام سکے، آسٹریلیا کیخلاف میلبورن ٹیسٹ میں بھی پیسر نے اپنی ہی گیند پر کیچ ڈراپ کرکے پیٹر ہینڈسکومب کو پویلین بھیجنے کا موقع گنوایا۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف 2017ءکے بارباڈوس ٹیسٹ میں احمد شہزاد نے عامر کی گیند پر کارلوس براتھویٹ کا کیچ چھوڑا جب کہ سری لنکا کیخلاف ابوظہبی ٹیسٹ میں دوسری سلپ میں کھڑے اسد شفیق گیند پر قابو پانے میں ناکام رہے، آئرلینڈ سے واحد ٹیسٹ میں سرفراز احمد نے ایڈجوائس اور اظہر علی نے ولیم پورٹر فیلڈ کو اننگز جاری رکھنے کا موقع دیا۔یاد رہے کہ اگر محمد عامر کی گیندوں پر یہ کیچز ڈراپ نہ ہوتے تو ان کی حاصل کردہ وکٹوں کی تعداد کافی زیادہ ہوتی۔اسی اننگز کے دوران محمد عامر نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کے 100شکار بھی مکمل کیے ۔
یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ