الیکشن 2018 کی تیاریاں: الیکشن کمشنر پنجاب نے ووٹرز کو ہدایات جاری کر دیں

2-431.jpg

لاہور(ویب ڈیسک) الیکشن کمشنر پنجاب کا کہنا ہے کہ انتخابات 2018 کی تیاریاں جاری ہیں، انتخابی فہرستیں 30 اپریل کو منجمد کردی جائیں گی۔ تفصیلات کے مطابق الیکشن کمشنر پنجاب شریف اللہ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حلقہ بندیوں اور انتخابی فہرستوں پر کام جاری ہے۔ 26 مارچ سے فہرستیں

آویزاں کر دی گئی ہیں جو 24 اپریل تک آویزاں رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ فہرستوں میں اضافہ، تبدیلی اور درستگی ہوسکتی ہے۔ ووٹرز فارم پر کر کے انہیں ڈسپلے سنٹرز میں جمع کروائیں۔ الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ انتخابی فہرستیں 30 اپریل کو منجمد کر دی جائیں گی۔ انتخابی عملے کی تربیت 2 اپریل سے شروع ہوگی۔ خیال رہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان عام انتخابات 2018 کے لیے شہریوں کو ووٹ کے اندراج، اخراج یا درستگی کے لیے آخری ہدایت جاری کرچکی ہے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے کہا گیا ہے کہ شہری اپنے ووٹ کا اندراج، کسی غیر متعلقہ یا فوت شدہ شخص کے ووٹ کا اخراج یا کوائف کی درستگی کروا سکتے ہیں۔ ووٹ کے اندراج کے لیے فارم 15، اخراج کے لیے فارم 16 اور کوائف کی درستگی کے لیے فارم 17 استعمال کیا جاسکتا ہے۔ دوسری جانب خبر کے مطابق الیکشن کمیشن (ای سی پی) نے عام انتخابات 2018 میں آخری وقت میں کسی بھی مسئلے کا سامنے کرنے سے بچنے کے لیے ابھی سے بھرپور مشق شروع کرنے کی تیاری کرلی۔ویب سائٹ پر جاری کردہ ’روڈ ٹو الیکشن 2018‘ کے نام سے دستاویز کے مطابق تمام صوبائی چیف سیکریٹریز، سیکریٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اور وفاقی اداروں کے سربراہوں کو 2016 میں

ان افراد کی فہرست فراہم کرنے کا کہا گیا تھا، جو جنوری 2018 میں دستیاب ہوں گے۔حکم میں کہا گیا تھا کہ جن مطلوبہ افراد کو تربیت دی جائے گی ان کی عمر 55 برس سے کم ہو، کمپیوٹر کی تعلیم رکھتے، سمارٹ فونز کا استعمال جاننے کے ساتھ ساتھ اچھی شہرت بھی رکھتے ہوں۔دستاویزات کے مطابق 31 دسمبر 2016 تک وفاقی اور صوبائی حکومت کی جانب سے 50 ہزار افسران کے نام موصول ہوئے، تیارکردہ ڈیٹا اس جانب اشارہ کرتا ہے کہ تفصیلات اور افسران کو منصوبے کے تحت استعمال کیا جاسکتا ہے۔دستاویز کہتی ہے کہ الیکشن کمیشن افسران کی مطلوبہ 70 ہزار اہلکار حاصل کرنے کی کوشش کرے گا جبکہ ان کی تربیت کا آغاز رواں برس جون سے ہوگا۔اس حوالے سے تربیتی مواد اور لاجسٹک انتظامات کے لیے اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت جاری ہے، فیڈرل الیکشن اکیڈمی (ایف ای اے) نے کرائے پر حاصل کیے گئے پوسٹل اسٹاف کالج اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے ریگولر عملے اور افسران کی تربیت کا آغاز کردیا ہے ۔الیکشن کمیشن کی جانب سے گریڈ 8 سے گریڈ 21 کے تمام 1649 افسران اور ملازمین کو 2018 کے عام انتخابات سے قبل تربیت دینے کا منصوبہ بنایا گیا ہے، اس حوالے

سے ایک ٹریننگ ونگ بھی قائم کیا گیا ہے جو فعال طور پر اندرون و بیرون ملک کے تربیتی اداروں اور تحقیق سے منسلک اداروں سے رابطے میں ہے، جس سے امید ہے کہ عملے کی صلاحیت بڑھانے میں مدد ملے گی۔ حال ہی میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے دوران ملک بھر میں تقریبا 75 ہزار پولنگ اسٹیشنز بنائے گئے تھے، جن کے وجود کی حیثیت اور تصدیق کے لیے متعلقہ صوبائی حکومتوں اور محکمہ بلدیات کے ساتھ مل کرایک مشق کی جا رہی ہے، 31 دسمبر 2016 تک ملک بھر سے 11 ہزار 81 پولنگ اسٹیشنز کی تصدیق ہوچکی تھی، جن کے مقامات اور نقشے عوامی معلومات کے لیے جیوگرافک انفارمیشن سسٹم (جی آئی ایس) کے تحت ویب سائٹ پر اپ لوڈ کردیئے گئے ہیں ۔ الیکشن کمیشن کو امید ہے کہ اس حوالے سے تمام مشقیں رواں برس 30 جون تک مکمل ہوجائیں گی۔ دستاویز کے مطابق الیکشن بل کا مسودہ رواں سال منظور ہونے کی امکان ہے جبکہ امید کی جا رہی ہے کہ الیکشن ایکٹ 2017 کے نفاذ سے قوانین آسان اور انتخابی نظام مضبوط ہوگا۔
یہ خبر جس ویب سائٹ سے لی گئی ہے اس کا لنک یہاں ہے. شکریہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *